|

وقتِ اشاعت :   January 1 – 2014

اسلام آباد(آزادی نیوز) فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر) نے جعلی کاروباری یونٹس کی سیلز ٹیکس رجسٹریشن روکنے کے لیے نیشنل انسٹی ٹیوشنل فسیلی ٹیشن ٹیکنالوجیز پرائیولیٹ لمیٹڈ (این آئی ایف ٹی)کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔’’روزنامہ آزادی ‘‘ کو دستیاب دستاویز کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی طرف سے این آئی ایف ٹی کے تعاون سے نئے کاروباری یونٹس کی رجسٹریشن کے لیے خود کار (آٹومیٹڈ)نظام متعارف کرانے کی تجویز کا جائزہ لیا جارہا ہے، اس سے پہلے 27 اکتوبر 2005 کو فیڈرل بورڈ آف ریونیو اور این آئی ایف ٹی کے درمیان ٹیکس دہندگان کو الیکٹرانیکلی ٹیکس گوشوارے جمع کرانے کی اجازت دینے کے لیے ڈیجیٹل سرٹیفکیٹس جاری کرنے کا معاہدہ طے پایا تھا اور اس معاہدے کی منظوری باضابطہ طور پر وزارت قانون نے دی تھی، اس لیے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی طرف سے اس تجویزکا جائزہ لیا جا رہا ہے کہ کاروباری یونٹس کی سیلز ٹیکس رجسٹریشن کے لیے آٹومیٹڈ سسٹم متعارف کرانے کے لیے این آئی ایف ٹی کے ساتھ ماضی میں طے پانے والے معاہدے کو بحال کیا جائے۔ دستاویز کے مطابق ایف بی آرنے جعلی و غیر قانونی ریفنڈز کے لیے جعلی انوائسز کا اجرا روکنے اور جعلی سیلز ٹیکس رجسٹریشن حاصل کرنے والے کاروباری یونٹ کا سراغ لگانے کے لیے سیلز ٹیکس رجسٹرڈ یونٹس کے بینک اکاؤنٹس، یوٹیلٹی کنکشن، تاجروں و صنعت کاروں کے کمپیوٹرائزڈ قومی شناختی کارڈ کی این ا?ئی ایف ٹی سے تصدیق کرانے کا فیصلہ کیا ہے، اس کے علاوہ حقیقی اور اصل کاروباری یونٹس کی رجسٹریشن کو یقینی بنانے کے لیے بائیو میٹرک تھمب ایمپریشن کے ذریعے تصدیق کرائی جائے گی جبکہ سیلز ٹیکس رجسٹریش کرانے والے جعلی کاروباری یونٹس کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔