|

وقتِ اشاعت :   January 1 – 2014

کوئٹہ( آئی این پی)وادی کوئٹہ سمیت شمالی بلو چستان بدستور شدید سردی کی لپیٹ میں ہے کاروبار زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی کوئٹہ میں ریکارڈ توڑ سردی کے ساتھ ہی سوئی گیس بھی نایاب ہوگئی ہے۔ شدید سردی میں گیس پریشر میں کمی کے باعث سوئی سدرن گیس کمپنی نے شہر کے تمام سی این جی اسٹیشن غیر معینہ مدت کیلیے بند کردیے ہیں۔گیس اوربجلی کے اس بحران نے قدیم انگھٹیوں کو پھر سے زندہ کردیاہے۔ یہ روایتی انگھٹیاں سردیوں میں کمرے کو گرم رکھنے کیلئے استعمال ہوتی ہیں۔ان میں کوئلہ اور لکڑی کو ایندھن کے طورپراستعمال کیاجاتاہے قلات میں منفی16کوئٹہ منفی12زیارت اور ہربوئی منفی19سینٹی گریڈ ریکارڈ کیاگیاکوئٹہ میں گیس غائب اور بجلی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ بدستور جاری ہے محکمہ موسمیات کے مطابق گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملک میں سب سے کم درجہ حرارت صوبہ بلوچستان کے شہر قلات میں ریکارڈ کیا گیا جہاں درجہ حرارت منفی 16 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا۔اس کے علاوہ درجہ حرارت کوئٹہ میں منفی 12، دالبندین میں منفی نو زیارت ‘ہربوئی منفی19سینٹی گریڈ تک پہنچ گیامحکمہ موسمیات کے مطابق کوئٹہ میں اتنی زیادہ سردی آخری بار نو دسمبر 1974 میں پڑی تھی کوئٹہ کا درجہ حرارات منفی 14 سینٹی گریڈ تک جاپہنچا جس کے باعث ندی نالوں میں بہننے والا پانی بھی منجمد ہو گیا ہے۔ اس کے علاوہ نلکوں میں بھی پانی جم گیا ہے جس سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔جبکہ کوئٹہ شہر میں گیس پریشر نہ ہونے کے باعث عوام کو مشکلات کا سامنا کر نا پڑا ۔گیس کی عدم دستیابی کے ساتھ ہی نہ صرف ان کی مانگ میں اضافہ ہوا ہے ساتھ ہی گھروں میں برسوں پرانی روایت بھی لوٹ آئی ہے۔ کوئٹہ ،زیارت ،قلات اورپشین میں گیس پریشر میں کمی اوربجلی کی لوڈشیڈنگ کے باعث لوگوں نے پھر سے گھروں میں روایتی انگھٹیوں کا استعمال کرنا شروع کر دیا ہے۔بلوچستان کے کئی اضلاع اب بھی گیس سے محروم ہیں، لیکن جہاں گیس کی سہولت دستیاب ہے،وہاں بھی اس کی آنکھ مچولی سردی سے ٹھٹھرتے شہریوں کو متبادل ذرائع تلاش کرنے پر مجبور کر دیتے ہیں۔دوسری جانب کوئٹہ میں شدید سردی میں گیس پریشر میں کمی کے باعث سوئی سدرن گیس کمپنی نے شہر کے تمام سی این جی اسٹیشن غیر معینہ مدت کیلئے بند کردیے ہیں۔سوئی سدرن گیس کمپنی کوئٹہ کے جنرل منیجر ہارون رشید نے بتایا کہ کوئٹہ میں سی این جی اسٹیشن بند کرنے کا فیصلہ گھریلو صارفین کو گیس کی طلب پوراکرنے کے لیے کیاگیاہے۔سی این جی اسٹیشنوں کی بندش سے سی این جی استعمال کرنے والے صارفین کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔