|

وقتِ اشاعت :   January 1 – 2014

اسلام آباد (آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ آزاد عدلیہ اور آزاد میڈیا کی موجودگی میں پاکستان آگے بڑھنے کیلئے تیار ہے اور سالِ نو ملک میں امن کی بحالی کی نوید لائے گا،خیبر پختونخواہ اور بلوچستان میں امن کے قیام کیلئے مذاکرات ہی واحد حل ہیں، ڈالروں کی چمک سے مرعوب ہونے والے غلامانہ ذہنیت کے حامل عناصر کو سمجھنا چاہیے کہ تشدد ملک میں مزید فساد اور دہشت گردی کی وجہ بنتا ہے۔ نئے سال کی آمد پر سماجی رابطے کی ویب سائیٹ پر جاری اپنے بیان میں چیئرمین تحریک انصاف نے سال 2014کو تبدیلی کا سال قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عدلیہ کی آزادی کیلئے ہماری جانب سے برپا کی جانے والی تحریک ثمر بار ہوگی اور آزاد میڈیا اور آزاد عدلیہ کی موجودگی میں ملک آگے بڑھے گا۔ آزادانہ ، منصفانہ اور شفاف انتخابات کو وقت کی اہم ترین ضرورت قرار دیتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے ملک میں انتخابی نظام کی اصلاح کے بارے میں اپنے موقف کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں جمہوریت کے تسلسل کو برقرار رکھنے کیلئے 11مئی کو دھاندلی کرنے والوں کے احتساب کا مطالبہ کرتے رہینگے۔ موجودہ اور سابقہ حکمرانوں کے اندازِحکمرانی اور طرزِ حیات پر تبصرہ کرتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمران بھی اپنے سابقہ حکومت کے نقش قدم پر گامزن ہے چنانچہ قوم کوجان لینا چاہیے کہ بیرون ملک دولت کے انبار جمع کرنے والے رہنما کبھی بھی قومی مفاد کی خاطر امریکہ کے سامنے کھڑے ہونے کی جرات نہیں کرسکتے۔ تاہم انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ بعض عناصر کی تمناؤں کے برعکس 2014ء کا سال ملک میں امن کی بحالی کا سال ہوگا۔ سالِ نو کے موقع پر اپنے پیغام میں چیئرمین تحریک انصاف نے اللہ رب العزت سے انصاف کی عملداری اور قومی مفادات کی نگہبانی کیلئے جاری جدوجہد میں ثابت قدمی کی دعا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف ملک میں نظام کی اصلاح اور لوگوں کی فلاح کے حوالے سے تبدیلی کی جانب سفر جاری رکھے گی اور نئے پاکستان کی تعمیر میں سرخرو ہوگی۔