|

وقتِ اشاعت :   April 1 – 2014

اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف کو مسلم لیگ  (ن) کے رہنماؤں  نے سابق صدر پرویز مشرف کو بیرون ملک نہ جانے دینے کی تجویز دے دی ہے تاہم اس سلسلے میں کوئی بھی حتمی فیصلہ آج شام ہونے والے ایک اور مشاورتی اجلاس میں کیا جائے گا۔

وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت غیر رسمی مشاورتی اجلاس میں  وزیر داخلہ چوہدری نثار، وزیر اطلاعات پرویز رشید،وزیر دفاع خواجہ آصف، ڈاکٹر قادر بلوچ اور وزیر اعظم کے معاون خصوصی عرفان صدیقی نے شرکت کی۔ اجلاس میں طالبان کےساتھ مذاکراتی عمل میں اب تک ہونے والی پیش رفت اور آئندہ کے لائحہ عمل پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس کے علاوہ اجلاس میں پرویز مشرف کا نام ای سی ایل سے خارج کئے جانے سے متعلق بھی مشاورت ہوئی۔ تاہم کسی بھی فیصلے پرپہنچنے کے لئے شام کو ایک اور اجلاس ہوگا ۔

مشاورت اجلاس کے پہلے سیشن کے بعد  وزیر اعظم کی سربراہی میں اعلیٰ  سیاسی اور عسکری قیادت کا اجلاس بھی ہوا ، جلس میں وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، وزیر اطلاعات پرویز رشید، وزیر دفاع خواجہ آصف اور وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے علاوہ آرمی چیف جنرل راحیل شریف اور ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل ظہیر الاسلام نے شرکت کی۔ اجلاس میں قومی سلامتی کے امور طالبان سے مذاکرات میں اب تک ہونے والی پیش رفت اور دیگر امور پر بھی تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔