|

وقتِ اشاعت :   April 4 – 2014

اسلام آ باد: وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت اعلی سطحی میں طالبان سے مذاکرات جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا ہے۔

اجلاس میں وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، آرمی چیف جنرل راحیل شریف اور ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی لیفیٹننٹ جرنل ظہیر الاسلام اور وزیراعظم کے مشیر طارق فاطمی نے شرکت کی۔ اجلاس میں طالبان سے ساتھ مذاکرات جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا جب کہ طالبان کی جانب سے پیش کردہ مطالبا ت کے حوالے سے حکومتی حکمت بھی طے کی گئی، اس کے علاوہ حکومتی اور طالبان کمیٹیوں کے ارکان کے درمیان ہونے والے اجلاس کا ایجنڈا بھی تیار کیا گیا۔

قبل ازیں وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے اجلاس کے شرکاء کو حکومت اور طالبان کے درمیان ہونے والے براہ راست مذاکرات کے حوالے اب تک کی پیش رفت پر بریفنگ بھی دی جب کہ اجلاس میں طالبان کی جانب سے قیدیوں کی رہائی کے مطالبے اور جنگ بندی میں توسیع کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ڈی جی آئی ایس آئی ظہیر الاسلام کی جانب سے بھی ملک کی اندرونی صورت حال اور سرحدی سیکیورٹی معاملات بریفنگ دی گئی۔

دوسری جانب کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی شوریٰ نے بھی حکومت کے ساتھ جنگ بندی میں 10 اپریل تک توسیع کردی ہے۔ طالبان ترجمان شاہد اللہ شاہد کے مطابق طالبان مذاکراتی عمل میں سنجیدہ ہیں اسی لئے ایک بار پھر جنگ بندی میں توسیع کی جارہی ہے، حکومتی کمیٹی سے ملاقات اور جنگ بندی کی مدت ختم ہونےکے تین روز گزرنے کے بعد بھی حکومت کی طرف سے مثبت جواب کے انتظار میں ہیں لیکن پر اسرار خاموشی کا مظاہرہ کیا جا رہا ہے۔