|

وقتِ اشاعت :   March 3 – 2016

کوئٹہ: پاکستان تحریک انصاف بلوچستان کے چیف آرگنائزر سردار یار محمد رند نے سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے بلوچستان کے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 267 کے 42 پولنگ اسٹیشنوں کے نتائج کو کالعدم قرار دیکردوبارہ انتخابات کرانے کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہیں کہ انہوں نے ٹریبونل کے فیصلے کو برقرار رکھتے ہوئے حق اور سچ کی فتح قرار دیا ہے اور آئندہ انتخابات میں پی ٹی آئی کے عبدالرحیم رند امیدوار ہونگے اگر ہمارے عوامی مینڈنٹ کو چھیننے کی کوشش کی گئی تو ہم اس پر خاموش نہیں بیٹھیں گے اس لئے حکومت صاف اور شفاف انتخابات کو یقینی بنانے کیلئے پاک فوج کو تعینات کرکے انتخابات کرائیں تاکہ کسی کو دھاندلی کا موقع نہ مل سکے ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کی شب پارٹی کے صوبائی سیکرٹریٹ میں ہنگامی پریس کانفرنس کے دوران کیا اس موقع پر سردار خادم حسین وردگ ‘ قاسم سوری سمیت دیگر بھی موجود تھے سردار یار محمد رند نے کہا کہ پی ٹی آئی کی تنظیم سازی کے حوالے سے تمام مراحل مکمل ہو چکے ہیں اور ایک ہفتے کے دوران نامزد کئے جانیوالے آرگنائزرز کا اعلان کر دیا جائے گا انہوں نے کہا کہ بلوچستان سے قومی اسمبلی کے حلقہ اے این 267 کے 42 حلقوں کے نتائج کو سپریم کورٹ آف پاکستان نے کالعدم قرار دیکر دوبارہ انتخابات کرانے کا حکم سنایا ہے جسے ہم حق اور سچ کی فتح سمجھتے ہیں کیونکہ سپریم کورٹ آف پاکستان الیکشن ٹریبونل کے فیصلے کو برقرار رکھا ہے اور یہ فیصلہ 3 سال گزرنے کے بعد آج سنایا گیا ہے اس سے قبل 2008ء کے انتخابات میں بھی دھاندلی اور ظلم و زیادتی کے ذریعے این اے 267 کے انتخابات میں عوام کی جانب سے مجھے دیا جانے والا مینڈیٹ چھینا گیا تھا جس کیخلاف ٹریبونل اور سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے جیت کے حوالے سے فیصلہ میرے حق میں آیا تھا لیکن اس وقت حکومت کی مدت میں 7 روز باقی تھے جعل سازی کے ذریعے 4 سال 10 ماہ مذکورہ وفاقی وزیر تمام اختیارات اور وسائل سمیت سہولیات استعمال کرتے رہے لیکن عدلیہ کی جانب سے حق اور سچ پر مبنی فیصلہ سنایا گیا ایک بارپھر سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے حق اور سچ پر فیصلہ دیا گیا ہے یہ ان ہزاروں بلوچستان کے لوگوں کی فتح ہے جنہوں نے مجھ پر اعتماد کرکے مجھے ووٹ دیا تھا کیونکہ اس وقت کے نگران حکمرانوں وزیراعلیٰ ‘ گورنر نے عوام کے ووٹوں پر ڈاکہ ڈال کر عوام کے مینڈیٹ کو چرایا تھا لیکن آج کے فیصلے نے ہمیں عوام کی عدالت میں سرخرو کر دیا تھا کہ دو بار زبردستی حکومتی مینڈیٹ کے ذریعے زبردستی کچھی اور جھل مگسی کے عوام کی جانب سے مجھے دیا جانا والا مینڈیٹ چھینا تھا اور اب انتخابات میں پی ٹی آئی کا عبدالرحیم رند امیدوار ہوگا عدلیہ الیکشن کمیشن اور اسٹیبلشمنٹ سے یہی درخواست کرتے ہیں کہ وہ صاف اور شفاف انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنائیں اور ان انتخابات کو فوج کی نگرانی میں کرائے تاکہ عوام کے مینڈیٹ پر کوئی ڈاکہ نہ ڈال سکے انہوں نے کہا کہ انتخابات میں ہم عوام کے ووٹوں سے ایک بار پھر سرخرو ہونگے