|

وقتِ اشاعت :   March 9 – 2016

اسلام آ باد: وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ ملک سے دہشت گردی کا مکمل خاتمہ اولین ترجیح اور قومی عزم ہے ، ملک بھر سے دہشت گردوں اور سہولت کاروں کے خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے ، دہشت گردی کے مکمل خاتمے تک آپریشن ضرب عضب جاری رہے گا۔ منگل کے روز وزیراعظم کی زیر صدارت امن و امان سے متعلق اجلاس ہوا ، جس میں آرمی چیف جنرل راحیل ، شریف ، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان ،وزیرخزانہ اسحاق ڈار ، مشیر خارجہ سرتاج عزیز ، مشیر برائے قومی سلامتی ، لیفٹیننٹ جنرل (ر) ناصر خان جنجوعہ ، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل رضوان اختر سمیت دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی ، اجلاس میں دہشت گردی کیخلاف جاری آپریشن ضرب عضب ، کراچی میں ٹارگٹڈ آپریشن ،قومی ایکشن پلان پر عملدرآمد، قومی سلامتی ، خطے کی صورتحال ، پاک بھارت تعلقات ، سمیت دیگر اہم امور پر تبادلہ خیال کیاگیا ،جبکہ اجلاس میں وزیراعظم اور آرمی چیف کے دورہ سعودی عرب کے ایجنڈے کو بھی حتمی شکل دی گئی ہے ، مشیر برائے قومی سلامتی جنرل (ر) ناصر خان جنجوعہ نے پاک بھارت تعلقات پر بریفنگ دی ، اجلاس میں شبقدر میں دہشت گردوں کے گزشتہ روز بزدلانہ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ہے اور حملے میں شہید ہونے والے اہلکاروں کے لیے دعامغفرت اور لواحقین کے لیے صبر جمیل کی دعا کی گئی ہے ، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ دہشت گردوں کی بزدلانہ کارروائیاں ہمارے عزم کو کمزور نہیں کر سکتے ، ملک سے دہشت گردی کا مکمل خاتمہ اولین ترجیح اور قومی عزم ہے، دہشت گردوں اور انکے سہولت کاروں کو ملک بھر سے ختم کریں گے ،انہوں نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب کے نتیجے میں دہشت گرد کمزور ہو گئے ہیں ،دہشت گردوں کے بڑے بڑے نیٹ ورک ٹوٹ چکے ہیں ، ملک میں امن کی فضاء قائم ہو رہی ہے ، ملک میں مکمل امن کے قیام تک دہشت گردوں کیخلاف آپریشن ضرب عضب جاری رہے گا۔

nawaz and philipدریں اثناء وزیر اعظم نواز شریف سے برطانوی وزیر خارجہ فلپ ہمینڈ نے ملاقات کی جس میں دونوں ممالک کے دوطرفہ تعلقات ، پیشہ وارانہ امور سمیت خطے کی سیکورٹی کی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ برطانوی وزیر خارجہ نے ضرب عضب میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں حاصل ہونے والی کامیابیوں پر مبارک باد پیش کی ۔ منگل کے روز وزیر اعظم ہاؤس اسلام آباد میں وزیر اعظم نواز شریف سے برطانوی وزیر خارجہ فلپ ہمینڈ نے ملاقات کی ۔ ملاقات میں مشیر خارجہ سرتاج عزیز ،معاون خصوصی طارق فاطمی ، سیکرٹری خارجہ اعتزاز چودھری نے شرکت کی ۔ ملاقات میں دونوں ممالک کے دوطرفہ تعلقات اور خطے کی صورت حال سمیت پیشہ وارانہ امور پر بات چیت کی گئی ۔ وزیر اعظم اور برطانوی وزیر خارجہ کی ملاقات میں توانائی ، تجارت ،معیشت سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ برطانوی وزیر خارجہ نے دہشت گردی کے خلاف آپریشن ضرب عضب میں ہونے والی کامیابیوں پر وزیر اعظم کو مبارک باد پیش کی اور دہشت گردی کے خلاف پاکستان حکومت اور افواج کے اقدامات کو سراہا ۔ اس موقع پر وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان برطانیہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو بڑی اہمیت دیتا ہے دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو فروغ دینے کے وسیع مواقع موجود ہیں ملاقات میں پاکستان کی جانب سے بھارت سمیت دیگر پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا، اس موقع پر برطانوی وزیر خارجہ فلپ ہمینڈ کا کہنا تھا کہ برطانیہ اور پاکستان تاریخی تعلقات رکھتے ہیں جبکہ دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف پاکستان کی کوشش قابل تعریف ہیں ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ ، پاکستان کے ساتھ دہشت گردی سے نمٹنے کے لئے تعاون کر رہا ہے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی جانب سے پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کی بہتری کے لے کوشش قابل ستائش ہیں ۔ دریں اثناء دونوں رہنماؤں کی ملاقات میں علاقائی صورت حال افغانستان اور پاک بھارت تعلقات سمیت انسداد دہشتگردی اور تجارتی امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔