|

وقتِ اشاعت :   July 16 – 2017

کوئٹہ : نیشنل پارٹی کے صوبائی ترجمان نے بی این پی عوامی کے جنرل سیکرٹری کے بیان کو مضحکہ خیز لغو اور پاگل پن قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ جنرل مشرف کی آمریت کے گھوڑے پرسوار ہوکر اسمبلی پہنچنے والے اگراپنی کامیابی کو عوامی مینڈیٹ قرارد یتے ہیں تو ایسے سیاسی پاگل پن کا کوئی جواب نہیں ۔

کرپشن اقرباپروری والے وزراء کی تاریخ سے اہل بلوچستان بخوبی واقف ہیں کہ راتوں رات تیل کے ڈرموں میں چھپ کر دبئی فرارہوئے اور اپنی جان بخشی کیلئے جنرل مشر ف رجیم کی کس طرح قدم بوسی کی گئی پنجگور کے غیو ر عوام اس سے واقف ہیں جہاں تک عوامی مینڈیٹ کا تعلق ہے تو موصوف کی سیاسی حیثیت "پدی” سے زیادہ نہیں ۔

ترجمان نے کہاہے کہ نیشنل پارٹی سے قبل جب اس سدوزئی کی حکومت تھی تو بلوچستان میں کسی بھی سرکاری ہسپتال میں پیناڈول کی گولی تک میسر نہیں تھی،

بلوچستان کے غریب عوام کی ادویات کی پیسے او ربلوچ بچوں کے ٹاٹ اور چاک کے پیسوں کی چوری کی گئی پنجگور کے نوجوانوں کوسرکاری نوکری دینے کی لگنے والے بولیاں بھی ابھی تک قبصہ زد عام ہیں ۔

اس کے علاوہ اکثر ملازمین کے ابتدائی چھ ماہ کی تنخواہیں اس سدوزئی نے وصول کی اور اپنے اکاونٹ میں اربوں روپے ڈالے پنجگور میں اربوں روپے مختلف علاقوں کے روڈ ز کے نام پر فج کئے گئے چیئرمین مارکیٹ کمیٹی کوئٹہ سے زرعی کالج ائیرپورٹ روڈ پر تحفے میں حاصل کی گئی اراضی کو 15کروڑ روپے میں فروخت کیا زراعت کے تمام تحقیقاتی پراجیکٹس کے تمام فنڈز خرد برد کئے کسی بھی زرعی ریسرچ پراجیکٹ کازمین پر وجود نہیں ہے ۔

ترجمان نے کہاکہ موصوف کا پنجگور میں بنگلہ سرکاری اراضی پر قائم ہے اوریہاں بھی محکمہ زراعت کے تین ٹیوب ویل نصب کئے گئے ہیں پنجگور میں دو ہزار ایکڑ اراضی سرکاری اور عوامی مفاد کی اراضی کو ایک روپے فٹ کے حساب سے الاٹ کرایا گیا ہے برٹش زمانے کے آفیسرکلب کی اراضی کو بھی معاف نہیں کیا گیا اور قیمتی اراضی کو اپنے بھانجے کے نام الاٹ کردیا ہے اس کے علاوہ میرانی ڈیم کے علاقے میں ایک ہزار ایکڑ زرعی اراضی اور 5سوایکڑ لسبیلہ میں اپنے بہنوئی کے نام پر خریدا ہے۔