|

وقتِ اشاعت :   September 15 – 2017

کوئٹہ : بلوچستان نیشنل پارٹی کے سابق رکن قومی اسمبلی میر عبدالرؤف مینگل اور سابق چیئرمین بی ایس او جاوید بلوچ نے جعلی ڈومیسائل کے ذریعے وفاقی محکموں میں بلوچستان کے کوٹے پر بھرتیاں بند کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ صوبائی حکومت ڈومیسائل کی تصدیق کا عمل 1973سے شروع کریں کیونکہ جعلی ڈومیسائل کی بنیاد پر بلوچستان کے تعلیم یافتہ نوجوانوں کے حقوق پر مسلسل ڈاکہ ڈالا جارہاہے 70کی دہائی میں جعلی ڈومیسائل کثیر تعداد میں جاری کرکے بلوچستان کے حصے میں آنے والی ملازمتوں اور مر اعات حاصل کی گئی جس سے مقامی نوجوانوں کی حق تلفی ہورہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ صوبے کے نوجوانوں میں حساس محرومی کے خاتمے کیلئے ضروری ہے کہ تمام جاری ہونیوالے جعلی ڈومیسائل کی مکمل جانچ پڑتال کی جائے کیونکہ جعلی ڈومیسائل رکھنے کی وجہ سے دوسرے صوبوں کے لوگ تعلیم وصحت کے محکموں میں بلوچستان کے کوٹے پر جاری ہونیوالے اسکالرشپ پر جعلی ڈومیسائل حاصل کرنیوالے دوسرے صوبوں کے لوگ مستفید ہورہے ہیں ۔

اس لئے بی این پی مطالبہ کرتی ہے کہ نیب ،ایف آئی اے اور محتسب اعلیٰ جلد سے جلد نوٹس لیکر جعلی ڈومیسائل کے ذریعے بلوچستان کے کوٹے پر جعل سازی سے نوکریاں حاصل کرنے والوں کے متعلق تحقیقات کرکے ذمہ داران کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ۔