|

وقتِ اشاعت :   October 14 – 2017

کوئٹہ : قائمقام انسپکٹر جنرل پولیس بلوچستان محمد ایوب قریشی نے کہا ہے کہ اسٹریٹ کرائم کی روک تھام کے لئے پولیس نے موثر اقدامات کئے ہیں جس کی بدولت آ ج پولیس اور ملزمان کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں ایک جوان شہید جبکہ دو زخمی ہو ئے ہیں فائرنگ کے نتیجے میں ملزمان کا ایک ساتھی بھی زخمی ہوا ہے ملزمان بہت جلد پولیس کے شکنجے میں ہونگے ۔

عوا م کے جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنا نے کے لئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لا رہے ہیں ان خیالات کا اظہا رانہوں نے کوئٹہ کے گنجان آباد علاقے فقیر محمد روڈ پر خواتین سے پرس چھیننے کی واردات کے دوران نامعلوم ڈاکوؤں اور پولیس کے درمیان فائرنگ کے واقعہ کے بعد جائے وقوعہ کا معائنہ کرنے کے دوران میڈیا کے نمائندے سے گفتگو کے دوران کیا ۔

اس موقع پر ریجنل پولیس آفیسر وڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ سمیت دیگر دیگر پولیس آفیسران بھی موجود تھے۔

قائمقام آئی جی پولیس بلوچستان محمد ایوب قریشی نے شہر میں اسٹریٹ کرائم کی وارداتوں کے سدباب کے لئے پولیس نے پٹرولنگ کا سسٹم شروع کیا تھا جس میں یونیفارم اور بغیر یونیفارم کے سر کاری گاڑی اور بغیر سرکاری گاڑی کے بھی پولیس کے جوان گشت کر رہے تھے کہ جمعہ کی صبح تقریبا ساڑھے10 بجے فقیر محمد روڈ پر نامعلوم ملزمان اور پولیس کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا ۔

جس کے نتیجے میں ہمارا ایک جوان کانسٹیبل علی احمد موقع پر شہید جبکہ دو زخمی ہو ئے ہیں جن کی حالت اب خطرے سے باہر ہے پولیس کی فائرنگ سے ایک حملہ آور کے زخمی ہونے کے اطلاعات ہے جس کی گرفتار کیلئے پولیس کا رروائی کر رہی ہے ۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ہے کہ پولیس یونیفارم، سرکاری گاڑی بغیر یونیفارم اور پرائیویٹ گاڑی میں بھی گشت کر رہی ہے کیونکہ یونیفارم اور سرکاری گاڑی کو دیکھ کر ملزمان فرار ہو جا تے ہیں ۔

ہماری کوشش ہے کہ جرائم پیشہ عناصر کے خلاف گھیرا تنگ کر کے انہیں قانون کے کٹہرے میں لایا جائے ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ہے کہ کوئٹہ کے میڈیا نے ہمیشہ مثبت انداز میں اپنا کردار ادا کیا ہے اور ہمیں امید ہے کہ جس طرح وہ ہمارے ساتھ رابطے میں ہے اپنی ذمہ داری کو احسن طریقے سے نبھاتے ہوئے ٹارگٹ کلنگ کے واقعات کو ٹارگٹ کلنگ جبکہ دیگر واقعات کو اسی تناظر میں حقیقت پر مبنی رپورٹنگ کر کے عوام تک حقائق پہنچائیں گے ۔

اس موقع پر ایک سوال کے جواب میں ریجنل پولیس آفیسر وڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس عبدالرزاق چیمہ نے کہا ہے کہ شہر میں ہونیوالے تینوں واقعات ٹارگٹ کلنگ کا نہیں طوغی روڈ کا واقعہ مختلف نوعیت کا ہے جس کی تحقیقات جاری ہے جبکہ دوسرا واقعہ گھر میں داخل ہونے پر زخمی کیا گیا ہے اور یہ واقعہ ڈکیتی اوراسٹریٹ کرائم کے زمرے میں آتا ہے پولیس نے قائمقام آئی جی کی خصوصی ہدایت پر امن کی بحالی کیلئے موثر اقدامات کئے ہیں ۔