|

وقتِ اشاعت :   November 20 – 2017

ڈیرہ بگٹی: صوبائی وزیر داخلہ میر سرفراز بگٹی نے کہاہے کہ دہشت گردی کاخاتمہ کئے بغیربلوچستان کی ترقی وخوشحالی ممکن نہیں ہے ۔

دہشتگردوں نے نہتے پاکستانی اورسیکورٹی اداروں کونشانہ بناکرہماری ایمانی غیرت کوچیلنج کیاہے

اب آنے والوں نسلوں کومحفوظ بنانے اورپاکستان کی مستقبل کوروشن کرنے کیلئے دہشتگردوں کی نسل کشی کے علاوہ کوئی اورراستہ نہیں بہت جلددہشگردوں سے پاکستان کوپاک کرکے دم لیں گے ۔

ان خیالات کااظہار انہوں نے اتوارکوپاکستان ہاؤس میں قبائلی عمائدین اورمختلف وفودسے ملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہاکہ موجودہ صوبائی حکومت نے دہشتگردی کے خلاف بہت ساری کامیابیاں بھی حاصل کی ہیں جبکہ ماضی میں بلوچستان کے کافی علاقے نوگوایریازتھے ۔

اب صوبہ بھرمیں کوئی نوگوایریانہیں ہے اوربچے ہوئے دہشتگردوں کوانکے بلوں سے نکال کرخاتمہ کرلینگے

علاوہ ازیں انہوں نے قبائلی عمائدین اورآئے ہوئے علاقائی مختلف وفودکے مسائل بھی سنے اورحل کرنے کے فوری متعلقہ آفیسران کوسختی سے پابندکیاکہ عوامی مسائل کے حل میں پس پیش قابل قبول نہیں ۔

عوامی مسائل انکے دہلیزپرفوری حل کیئے جائیں اور پی پی ایل رٹائراورفوت شدہ ملازمین کے ورثا کی بہرتیوں اوردیگرایگریمنٹ اورمطالبات کے حوالہ سے صوبائی وزیرداخلہ نے کہاکہ میں نے پی پی ایل حکام سے بات چیت کی ہے انکے مطالبات کوجلدتسلیم کیاجائے گااوررٹائراورفوت شدہ ملازمین کے ورثا کی تعیناتی بہت جلدہوگی ۔

انہوں نے ضلع بھرمیں گیس کی پریشرکی کمی پرسخت برہمی کااظھارکرتے ہوئے متعلقہ حکام کوسختی سے گیس کامسئلہ فوری حل کرنے کے احکامات دیئے۔