|

وقتِ اشاعت :   December 7 – 2017

کوئٹہ : کوئٹہ سمیت اندرون بلوچستان میں سردی کی لہر برقرار رہی کوئٹہ میں دھوپ نکلنے کے باوجود ہوائیں چلتی رہی سڑکوں پر پانی جمنے کے بعد کئی علاقوں میں ٹریفک کے حادثات ہوئے شہرمیں گیس کی قلت بدستور جاری ہے اور سوئی گیس کمپنی کے افسران مکمل طورپر خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں ۔

گزشتہ روز کراچی سے خصوصی طورپر سوئی گیس کمپنی کے افسران نے کوئٹہ کا دورہ کیا کوئٹہ شہرکے فائیو سٹار ہوٹل میں صحافیوں ،معزز شہریوں کے اعزاز میں ظہرانہ دیا اور دعوہ کیاکہ کوئٹہ شہر میں آئندہ گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ نہیں کی جائے گی مگر وہ اپنے وعدے پر قائم نہیں رہ سکے کمپنی کے ذمہ داروں نے اعلان کیا تھا کہ کمپنی نے مقامی شخص کو پی آر او مقرر کیا ہے آئندہ اگر کوئی شکایت ہو توا س سے رابطہ کیا جائے ۔

مگر افسوس ابھی تک پی آر او نے ابھی تک اس بارے میں کوئی وضاحت جاری نہیں کی کہ شدید سردی میں گیس کی لوڈشیڈنگ کیوں کی جارہی ہے بدھ کے روز بھی سارا دن یخ بستہ ہوائیں چلتی رہی اور لوگ گھروں میں محصور ہوگئے سرکاری دفاتر میں بھی حاضری تین دن سے کم ہے مارکیٹیں اور پلازہ کھلے ہیں مگر خریدار سردی کی وجہ سے باہر نہیں نکل رہے ہیں ۔

محکمہ موسمیات کے مطابق کوئٹہ اور اندورن بلوچستان میں جو سردی کی لہر آئی ہوئی ہیں وہ چند روز تک جاری رہیگی اور ہوسکتا ہے کہ آئندہ چند دن میں کوئٹہ سمیت اندرون بلوچستان میں بارشوں او ربرفباری کا سلسلہ بھی شروع ہوجائے ۔

محکمہ موسمیات کے مطابق سب سے زیادہ سردی قلات ،زیارت اور کوئٹہ میں پڑی ہے جہاں پر درجہ حرارت منفی 14جبکہ کوئٹہ میں منفی 10ہے جبکہ زیادہ سے زیادہ 8سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ہے اور ہوا میں نمی کا تناسب 80فیصد ہے ضلع گوادر اوردکی میں بھی شدید سردی کے باعث دو افراد جاں بحق ہوگئے جس میں ایک بھکاری بتایاجاتا ہے ۔

شدید سردی کے باعث کوئٹہ شہر میں کاروبار زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا ہے خاص طور پر رات کے وقت کئی علاقوں میں گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے ۔

کوئٹہ ،قلات ،ژوب میں بھی آئندہ 24سردی کی شدت برقرار رہے گی جبکہ پشین ،خانوزئی ،زیارت ،مسلم باغ،کان مہترزئی ،توبہ اچکزئی ،توبہ کاکڑی ،قلعہ عبداللہ ،چمن ،گلستان ،سوراب ،منگوچھر ،خالق آباد اور مستونگ مچھ ،نوشکی ،دالبندین ،پنجگور ان دنوں سردی کی لپیٹ میں ہیں اور ان علاقوں میں رہنے والے لوگ نقل مکانی کرکے گرم علاقے کی طرف جارہے ہیں