|

وقتِ اشاعت :   6 days پہلے

کوئٹہ: گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی نے کہا ہے کہ پاکستان چائنا اقتصادی راہداری کا سب سے زیادہ فائدہ بلوچستان اور اس کے عوام کو ہوگا۔

اس عظیم الشان منصوبے کے نتیجے میں پورے خطے میں سرمایہ کاری میں اضافہ ہوگا اور بنیادی ڈھانچے خاص طور سے مواصلاتی رابطہ کا نظام غیرمعمولی ترقی کرے گا جس کے نتیجے میں عمومی خوشحالی کے فروغ کے علاوہ بے روزگاری کے خاتمے میں مدد ملے گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے فرانس کے صحافیوں اور محققین پر مشتمل وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جس نے جمعرات کو گورنر ہاؤس بلوچستان میں ان سے ملاقات کی۔ وفد کی قیادت (Mr. Jacques Follorou) کررہے تھے۔ اس موقع پر گورنر نے کہا کہ پاکستان اور فرانس کے درمیان خوشگوار تعلقات ہیں اور فرانس مختلف شعبوں میں ہم سے بامعنی تعاون کی صلاحیت رکھتاہے۔

انہوں نے کہا کہ علمی اور تحقیقی ادارے اور شخصیات پاکستان اور خاص طور سے بلوچستان کے بارے میں اپنے تجارتی اور حکومتی حلقوں میں درست تفہیم اور نرم گوشے پیدا کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ علم اور ثقافت کے شعبوں میں فعال اور دوطرفہ تعاون دونوں ملکوں کے عوام پر مثبت اثرات مرتب کرسکتے ہیں۔

گورنر نے ایک سوال کے جواب میں بلوچستان کی جغرافیائی اہمیت اور یہاں موجود قدرتی وسائل اور تعاون وترقی کے روشن امکانات سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان وسیع رقبہ اور منتشر آبادی والا صوبہ ہے تاہم حکومت نے امن برقرار رکھنے اور دہشت گردی سے نمٹنے کی ہرممکن کوشش کی ہے اور صوبے کے حالات بتدریج بہتر ہورہے ہیں۔

دہشت گردی مقامی نہیں بلکہ عالمی مسئلہ ہے لہٰذا انسداد دہشت گردی کی پاکستان کی کاوشوں کو عالمی برادری کی جانب سے سراہا جانا چاہئے اور اس میں ہرممکن تعاون بھی فراہم کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ دہشت گردی کے خاتمے سے ایک دفعہ پھر رواداری، بھائی چارہ اور دیرپا امن کو فروغ حاصل ہوگا۔