|

وقتِ اشاعت :   February 14 – 2018

کوئٹہ : عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی بیان میں امن وامان کے خراب صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاگیا کہ سابقہ حکومت کی طرح موجودہ حکومت اور حکومتی مشینری عوام الناس کی جان ومال کے تحفظ میں ناکام دکھائی دے رہا ہے آئے روز شریف النفس شہری ،تاجر پیشہ افراد ،ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بن رہے ہیں ۔

چوری ،راہزنی ،اغواء برائے تتاوان میں کوئی خاطر خواہ کمی واقع نہیں ہو پارہی جسکی وجہ سے عوام الناس ذہنی کوفت اور اذیت میں مبتلاا ہوکر اجیرن زندگی گزارنے پرمجبور ہیں جبکہ صوبہ بھر میں امن وامان کے قیام کے نام پر قومی شاہراہوں سے لیکر شہروں کے اندر پولیس ودیگر سیکورٹی اداروں کے بے شمار ناکے اور چوکیاں وجود رکھتی ہے لیکن اسکے باوجود شرپسند عناصر بڑی دیدہ دلیری سے فرار ہوجاتے ہیں گزشتہ دنوں کلی حرمزئی سے تعلق رکھنے والا غریب پیشہ سید مولاداد اغا کو سرعام گولیاں ماری گئیں تاحال کوئی پیش رفت اور گرفتاری نہ ہوسکی ہے ۔

بیان میں کہاگیا کہ جو حکمران عوام کی جان ومال کو تحفظ فراہم نہ کریں اسے ہرگز حق حکمرانی کا حق نہیں اور جہاں نامعلوم افراد عوام کو قتل کریں حکمران انکے قتل کے ذمہ دار ہیں ۔

بیان میں حکومت سمیت تمام سٹیک ہولڈرز سے پرزور مطالبہ کیا گیا کہ وہ امن وامان کو قابو میں لانے کیلئے تمام وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے عوام کی جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے اپنی اپنی ذمہ داریوں کو بروقت ادا کریں اس سے پہلے کہ عوام اپنی تحفظ آپ کیلئے خود نکلیں ۔