|

وقتِ اشاعت :   February 14 – 2018

کوئٹہ: سینئرصحافی صدیق بلوچ کی رحلت پر تعزیت کا سلسلہ جاری ،گزشتہ روز سابق وزیراعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ ،ڈپٹی میئر یونس بلوچ ،یارجان بادینی سمیت اخبارات اور ٹی وی چینل سے وابستہ صحافیوں سمیت مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے ان کی رہائش گاہ پر جا کر ان کے فرزندوں سے اظہار تعزیت اور مرحوم کی درجات کی بلندی کیلئے فاتحہ خوانی کی۔

اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ بزرگ صحافی لالہ صدیق بلوچ نہ صرف اپنے قلم کے ذریعے صوبے کے پسماندہ عوام کی خدمت میں ہمیشہ پیش پیش رہے بلکہ وہ ایک سیاسی استاد بھی تھے ،مرحوم کا شمار پاکستان میں ون یونٹ کے خاتمے کی تحریک کے روح رواں میں کیاجاتا ہے ۔

صدیق بلوچ ہمیشہ پسے ہوئے طبقات کی نمائندگی کی ،جس کی پاداش میں انہیں پابند سلاسل اور مالی نقصان کا سامنا کرنا پڑ ا مگر مرحوم نے تمام تر مصائب اور مشکلات کو خاطر میں لائے بغیر ہر فورم پر بلوچ ساحل وسائل کی دفاع اور صوبے میں جاری ناروا اقدامات کے خاتمے کو اپنے صحافت کا محور بنائے رکھا ۔

صدیق بلوچ کے وفات سے پیدا ہونے والا خلا مدتوں پر نہیں ہوسکتا ،تعزیت کیلئے آنیوالوں نے صدیق بلوچ کی قومی خدمات پر انہیں خراج عقیدت پیش کیا