|

وقتِ اشاعت :   February 14 – 2018

کوئٹہ:  بلوچستان پبلک سروس کمیشن کے انتظامی امور کے اختیارات محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی کے حوالے کرنے کے معاملے کو بلوچستان ہائی کورٹ میں چیلنج کردیاگیا ۔

اس سلسلے میں منیر احمد کاکڑ ایڈووکیٹ کی جانب سے آئینی درخواست دائر کی گئی جس کی گزشتہ روز بلوچستان ہائی کورٹ کے ووکیشنل جج جسٹس جناب جسٹس محمداعجاز سواتی نے سماعت کی ۔سماعت کے دوران منیراحمدکاکڑ ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیاکہ پبلک سروس کمیشن کے انتظامی امور کااختیار خلاف قانون محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی بلوچستان کے حوالے کردیاگیاہے جس پر عدالت نے انہیں متعلقہ دستاویزات فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت کو 15فروری تک ملتوی کرنے کے احکامات دئیے ۔

بعدازاں آئی این پی سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے بلوچستان بار کونسل اور جوڈیشل کمیشن آف پاکستان کے ممبر منیراحمدکاکڑ کاکہناتھاکہ صوبائی حکومت کی جانب سے بلوچستان پبلک سروس کمیشن کے انتظامی اختیارات کو محکمہ ایس اینڈ جی ڈی کے حوالے کرنا درست نہیں بلکہ اس کے باعث پبلک سروس کمیشن کی آزاد حیثیت برقرار نہیں رہے گی ۔

اس سلسلے میں عدالت نے اگلی سماعت پر ان سے دستاویزات طلب کئے ہیں جس سے وہ فراہم کرینگے انہوں نے کہاکہ چند ماہ بعد پبلک سروس کمیشن کے چیئرمین ریٹائرڈ ہورہے ہیں اور کوشش کی جارہی ہے کہ اپنی مرضی کا نیا چیئرمین تعینات کیاجائے جو صحیح نہیں اسی لئے ہم نے اس سے عدالت میں چیلنج کردیاہے ۔