|

وقتِ اشاعت :   February 15 – 2018

کوئٹہ: جمعیت علماء اسلام کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سابق ایم این اے وسینیٹر حافظ حسین احمد نے کہاہے کہ بلوچستان میں ایوان بالا کا انتخاب ’’بالا ہی بالا ‘‘ہوتا نظر آرہاہے

اب ضروری ہے کہ ’’بابا رحمت ‘‘کو زحمت دی جائے کیونکہ عمران خان نے بھی سینیٹ کے ٹکٹ کیلئے چالیس کروڑ روپے کے آفر کا انکشاف کرلیا ہے اور دیگر پارٹیوں سربراہوں نے بھی اے ٹی ایم کے امیدواروں کو ٹکٹ دیا ہے ۔

یہ بات انہوں نے بدھ کو بلوچستان کے سابق نگراں وزیراعلی سردار غوث بخش باروزئی سے ملاقات کے بعد ’’این این آئی ‘‘ بات چیت کرتے ہوئے کہی۔سردار غوث بخش باروزئی نے انکی رہائش جامعہ مطلع العلوم میں ملاقات کی ۔

جو ڈیڑھ گھنٹہ جاری رہی ۔حافظ حسین احمد نے کہاکہ بلوچستان کے عوام حریت پسند اور غلامی سے نفرت کرتے ہیں انکے منتخب کردہ ارکان اسمبلی بھی آزاد امیدواروں کو ترجیح دے رہے ہیں ۔

’’بابا رحمت ‘‘ان پارٹی سربراہوں کو بھی زحمت دیں تاکہ انکی پنچائیت بلاکر مظلوم عوام کو صاف پانی کی فراہمی کی طرح سینیٹ کے صاف اور شفاف انتخابات کرائے جائے اور جو لوگ ‘‘چمک ‘‘کے بل بوتے پر ایوان بالا پہنچنے کی کوشش کررہے ہیں ان کے انتخاب سے پہلے انکی اہلیت کا فیصلہ کردیں کیونکہ بعد میں وہ بھی کہنے لگیں گے کہ ہمیں کیوں نکالاگیا ۔