چترال سے پشین تک ایک صوبہ۔۔۔ ایک موقع

Posted by & filed under خصوصی رپورٹ.

70سال کے بعد دوسری بار یہ موقع ہاتھ آیا ہے کہ پہلے مرحلے میں چترال سے پشین تک ایک صوبے کا قیام عوام کی مرضی سے بنایا جائے۔ یہ موقع اس وقت آیا ہے جب ریاست پاکستان نے یہ فیصلہ کر ہی لیا ہے کہ آزادقبائلی علاقوں خصوصاً فاٹا اور اس کے تمام ملحقہ علاقوں کو کے پی کے میں ضم کیا جائے

بلوچستان ءِ ڈکّال

Posted by & filed under بلوچی.

حاکمانی گیشیں دلگوش وتی راجکاری ءِ سرا انت ءُُ کمے باز ہما سرکاری کارانی سرا کہ آہاں زرمان پمشکہ اشاں بلوچستان ءِ ایندگہ جیڑھ پہ گچینی ڈکال ءِ ہچ سد ءُُ سما نیست ۔ایشی ءِ شاہدی ایش انت کہ جہل ءَ بگرداں برزا

بلوچستان میں جہاز سازی کی صنعت

Posted by & filed under خصوصی رپورٹ.

پاکستانی بلوچستان کا ساحل تقریباً ایک ہزار کلو میٹر طویل ہے جبکہ ایرانی بلوچستان کا ساحل دو ہزار کلو میٹر ہے جو ساحل مکران کہلاتا ہے اور مجموعی طورپر یہ تین ہزارکلو میٹر طویل ہے ۔ ان دونوں ممالک میں اس ساحلی پٹی پر 99فیصد آبادی بلوچوں کی ہے ۔ بلکہ گلف آف اومان کے آدھے حصے پر بھی بلوچ ہی آباد ہیں ۔

گوادر پورٹ ءِ پنچ نوکیں دھکہ

Posted by & filed under بلوچی.

حکومت ءِ نیمگ ءَ گوادر بندن ءَ نوکیں پنچ دھکہ( برت )جوڑ کنگ ءِ سوڈگ باز وشیں حالے ۔چد ءُُ پیسر سرکار ءَ چین ءِ مدت ءُُ کمک ءَ ایوک ءَ سے دھکہ جوڑ کتگ ءُُ ۲۰۰۶ ءَ کار بنا کتگ ۔پدا گوستگیں دہ سالاں بنجاہی حکومت ءَ گوادر بندن ءِ سرا پہیوکے ہم حرچ نہ کتگ

بلوچستان میں گیس کا ایک اور بڑا ذخیر دریافت

Posted by & filed under لیڈ اسٹوری.

کوئٹہ: بلوچستان کے مری قبائلی علاقے میں سوئی سے بھی زیادہ بڑا قدرتی گیس کا ذخیرہ دریافت ہوا ہے، یہ گیس کا ذخیرہ جندران کے علاقے میں دریافت ہوا ہے۔ یہ علاقہ مری اور کھتیران قبائل کے سنگم پر واقع ہے جہاں پر تیل اور گیس کی تلاش کا کام دہائیوں سے جاری

کوئٹہ کو شٹل ٹرین کی ضرورت

Posted by & filed under خصوصی رپورٹ.

روز اول سے ہی کوئٹہ کے شہریوں کو ماس ٹرانزٹ کے حق سے محروم رکھا گیا ہے اور لوگوں کو دہائیوں پرانی بسوں اور رکشوں کے رحم وکرم پر چھوڑ دیا گیا کوئٹہ کی یہ خوش قسمتی ہے کہ یہاں پر ریل کا بہتر نظام موجود ہے

گوادر، زاہدان، ماسکو ریل لنک کا منصوبہ

Posted by & filed under کالم / بلاگ.

علاقائی معاشی گروپنگ میں روس کی اعلانیہ شرکت کے بعد پورے خطے کا معاشی منظر نامہ بدلتا نظر آرہا ہے اب یہ قوی امید پیداہوچکی ہے کہ روس گوادر ،چاہ بہار کی معاشی گزر گاہ کو تجارت کیلئے استعمال کر سکے گا۔ چین سے کہیں زیادہ روس معاشی فوائد حاصل کرنے کی پوزیشن میں ہوگا۔

بلوچستان، جعلی ادویات کے کاروبار کیخلاف مقدمات عدالتوں میں پیش

Posted by & filed under لیڈ اسٹوری.

کوئٹہ: بلوچستان میں جعلی ادویات کے کاروبار میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کرنے کیلئے مقدمات تیار کر لئے گئے۔ جس کے تحت جعلی ادویات کے کاروبار میں ملوث افراد میڈیکل سٹورز اور جعلی ادویات بنانے والوں کو سخت سزائیں دی

پہ بلوچستان ءَ نوکیں سر شہرے

Posted by & filed under بلوچی.

گوستگیں ۳۵ سالاں بلوچستان ءِ سر شہر بوھگ ءَ ابید ہم کوئٹۃ یکشل ءَ ڈلگچار کنگ بوتگ ہر دور ءِ حکومتاں بلوچستان ءِ سر شہر ڈالچار کتگ پمشکہ اے شہرءَ مدام چہ بنکی آسراتیاں زبہر بوتگ چوکہ ایندگہ دمگانی شہر کراچی ،پشاور ،لاہور، ءُُ اسلام آباد دیمروئی ءِ نیمگ ءَ برتگ انت ۔راجکارانی حکومتاں اے شہر ءَ را بنکی آسراتیاں دئیگ ءِ بدل ءَ مدام وتی راجکاری کارندہاں

بلوچستان کے لئے نیا دارالخلافہ تلاش کریں

Posted by & filed under کالم / بلاگ.

تاریخی طورپر کوئٹہ برطانوی استعمار کا ہیڈ کوارٹر رہا ہے ۔ یہ گیریژن ٹاؤن تھا اور برطانوی افواج کی چھاؤنی بھی ۔ یہاں پر تاج برطانیہ کا نمائندہ اے جی جی رہتا تھا ۔ برطانوی راج کے خاتمے کے بعد کوئٹہ کی اہمیت چھاؤنی کی وجہ سے تھی اور ون یونٹ میں یہ کوئٹہ ڈویژن کا دارالخلافہ تھا۔ ون یونٹ کے خاتمے کے بعد کوئٹہ بلوچستان صوبے کا دارالخلافہ بن گیا ۔ گزشتہ 35سالوں میں کوئٹہ کی یہ حیثیت برقرار ہے یہاں کے مقامی قبائل میں شاہوانی ‘ رئیسانی ‘ کرد‘ کانسی کے علاوہ بڑی تعداد میں ہزارہ قبائلی اور پنجابی آباد کار بھی تقریباً ایک صدی سے موجود ہیں۔