دہشت گردی کی کارروائیوں میں62افراد ہلاک

| وقتِ اشاعت :  


کوئٹہ ‘ پاراچنار اور کراچی میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں مجموعی طورپر 62افراد ہلاک اور 100سے زائد زخمی ہوئے ۔کوئٹہ شہر کے واقعہ میں 13افراد ہلاک اور 21 زخمی ہوئے ۔



بلوچستان میں ریلوے

| وقتِ اشاعت :  


بلوچستان اسمبلی میں تقریر کرتے ہوئے ایک رکن اسمبلی نے اس بات کی طرف اشارہ کیا کہ موجودہ مسلم لیگ کی وفاقی حکومت نے گزشتہ چار سالوں میں بلوچستان کے لئے ایک بھی میگا پروجیکٹ نہیں دیا، سال میں صرف چند ایک ارب روپے بلوچستان میں خرچ کیے گئے ۔



بلوچستان کے معاشی مسائل

| وقتِ اشاعت :  


بلوچستان کے وزیر خزانہ سے لے کر وزیر تعلیم تک نے اپنے بجٹ تقاریر میں وفاقی حکومت پر شدید نقطہ چینی کی ۔



امریکا کے ساتھ تعلقات

| وقتِ اشاعت :  


پاکستان اور امریکا کے تعلقات روز بروز تنزلی کی طرف جارہے ہیں ۔ مغربی ذرائع ابلاغ سرکاری حلقوں کی جانب سے یہ تصدیق کر رہے ہیں کہ امریکا سوچ رہا ہے کہ پاکستان پر آنے والے دنوں میں دباؤ مزید بڑھایا جائے ۔



سردار عطاء اللہ مینگل کے گھر پر حملہ

| وقتِ اشاعت :  


گزشتہ دنوں سردار عطاء اللہ مینگل کے گھر کے باہر شر پسندوں نے بم دھماکہ کیا تھا جس سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ۔ البتہ مکان کے گیٹ کو کچھ نقصان پہنچا ۔ دھماکے کا مقصد یہ معلوم ہوتا ہے کہ خوف و ہراس پھیلانا یا سردار اختر مینگل جو آج کل امریکا میں ہیں ان کو ہراساں کرنا ہے ۔



بلوچستان میں اسمبلی میں تلخ کلامی

| وقتِ اشاعت :  


گزشتہ روز نیشنل پارٹی کے وزرء ا اور اراکین اسمبلی نے اجلاس سے احتجاجاً واک آؤٹ کیا جب پی ایم اے پی کے رکن نے خالد لانگو کے خلاف نازیبا الفاظ کیے ۔ سرکاری بنچوں سے رکن صوبائی اسمبلی خالد لانگو نے بجٹ کے بعض حصوں پر اعتراضات اٹھائے اور کہا کہ قلعہ عبداللہ جو وزیر منصوبہ بندی اورترقیات کے وزیر کا مسکن ہے،کے لیے تین ارب روپے مختص کیے گئے ہیں اور باقی علاقوں کو نظر انداز کیا گیا ہے جن میں ان کا ضلع اور حلقہ انتخاب قلات بھی شامل ہے۔



نہری نظام کو بہتر بنائیں

| وقتِ اشاعت :  


ہمارے اخبار میں ایک خبر چھپی ہے کہ محکمہ آبپاشی پٹ فیڈر میں پانی چوروں کے خلاف کارروائی کا آغاز کردیا گیاہے ۔



احتساب یا انتخاب

| وقتِ اشاعت :  


معلو م ہوتا ہے کہ وزیراعظم پاکستان وقت سے پہلے انتخابات کرانے کی کوشش کررہے ہیں جی آئی ٹی کے سامنے سوالات کے جوابات دینے سے نہ صرف انکار کیا بلکہ یہ بھی کہہ دیا کہ ان کے خاندانی بزنس پر سوالات اٹھائے جارہے ہیں سپریم کورٹ اور پارلیمان میں خود ان کی اپنی تقریر گواہ ہے کہ انہوں نے خود کو احتساب کے لئے پیش کیا تھا تاکہ عوام یہ تمام معاملات سڑکوں پر نہ لے جائیں ۔



بلوچستان بجٹ

| وقتِ اشاعت :  


بلوچستان کی حکومت نے اپنی دیرینہ روایات کو برقرار رکھا اور روایتی سالانہ بجٹ پیش کیا ۔اس میں وہی پی ایس ڈی پی کے جاری اور نئے منصوبوں کا ذکر وزراء اور اراکین اسمبلی کی دلچسپی کا باعث رہے ۔



بلوچستان میں پانی کی قلت

| وقتِ اشاعت :  


روزانہ درجنوں شہروں سے پانی کی قلت اور اس کے خلاف احتجاج کی خبریں آرہی ہیں پوری حکومت اور مقامی انتظامیہ بے بس نظر آرہی ہے ، ان کی سمجھ میں کچھ نہیں آرہا ہے کہ کیا کیا جائے ۔ پانی کی قلت ایک مسلمہ حقیقت ہے اس سے انکار نہیں کیا جاسکتا ۔