شہیداعظم نواب اکبربگٹی

| وقتِ اشاعت :  


زندگی اللہ تعالیٰ کی ایک بہت بڑی نعمت ہے انسان جب جنم لیتا ہے اس دنیا میں داخل ہوتا ہے وہ آزاد اور خودمختار ہوتا ہے لیکن اگر اس کی قوم غلام ہے تو وہ بھی غلام ہی کہلائے گا اگر آزاد ہے تو آزادی کی فضاء میں جنم لیتا ہے وہ شخص جس نے آزادی کی فضاء میں جنم لیا ہے وہ تو خوش قسمت ہے لیکن دوسری جانب بد قسمت وہ لوگ ہیں جو غلامی میں جنم لیتے ہیں اور دوسروں کے دست نگر رہ کر محکومی ‘ محرومی اور غلامی کی زندگی گزارتے ہیں ۔



پاکستان میں جمہوریت کمزور کیوں ہے؟

| وقتِ اشاعت :  


اگرچہ پاکستان پیپلز پارٹی کی گزشتہ حکومت نے اپنی مدت پوری کی،جو پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ہوا،مگر بد قسمتی سے اس کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی اپنی میعاد کی تکمیل کا دعویٰ کرنے کے قابل نہیں ہو سکے۔



گوادر ماسٹر پلان کی اپ گر یڈ یشن اور ما ہی گیروں کا مستقبل

| وقتِ اشاعت :  


گوادر کی آبادی ماہی گیروں کی بستی سے ما نوس تھی اب یہ شہر بین الاقوامی اہمیت حاصل کر چکا ہے جس کی وجہ یہاں پر قائم گہر ے بندرگاہ کا قیام اور سی پیک جیسی غیر معمولی منصوبے کا کلیدی درجہ پا نا ہے۔



چمالنگ تعلیمی پروگرام امید کی کرن 

| وقتِ اشاعت :  


دنیا میں بسنے والے ہر قوم سے تعلق رکھنے والے افراد کے لیئے ایک ایک دن بہت ہی اہمیت کا حامل ہوتا ہے ‘ہر سال ہردن ‘اور ہرگھڑی اپنی ایک الگ اہمیت پہچان اور تاریخ رکھتا ہے کیونکہ ان کی اہمیت باقی دنوں مہینوں اور سالوں سے کچھ زیادہ اہمیت رکھتا ہے بلکہ مختلف بھی ہوتی ہے اور اس گھڑی لمحہ دن یا سال کو لوگ صدیوں یاد رکھتے ہیں بلکہ اسی روز کو تاریخ کے کتابوں میں خصوصی اہمیت دی جاتی ہے ۔



تھر کا مزاحمتی شاعر یا دہشت گرد؟

| وقتِ اشاعت :  


پاکستان کے صوبہ سندھ کے صحرائی علاقے تھرپارکر میں حکومت سندھ اور اینگرو کمپنی کے دعویٰ کے مطابق کوئلے سے بجلی کی پیداوار آنے والے چند سالوں میں شروع ہوجائیگی۔لیکن اس منصوبے سے متاثر ہونے والے افراد کی بحالی اور ان کی زمینوں کے معاوضے کی ادائیگی پر تاحال مکمل طور پر عملدرآمد نہیں ہوسکا۔



میر بزنجو کا فلسفہ سیاست

| وقتِ اشاعت :  


کیا بلوچ معاشرہ سوچ کے اعتبار سے آج بھی خانہ بدوش اور دیہاتی ہے ؟کیا پر تشدد سیاست جدوجہد کا افضل ترین راستہ ہے ؟ کیا ہم بلوچوں کو دشمن کی بھی ضرورت ہے یا ہم خود اپنے لیے کافی ہیں ؟ اوپر ذکر کیے گئے ان سوالات پر گفتگو کرنے سے یہاں پر یہ تحریر کرنا بے محل نہ ہوگا کہ بلوچستان کا جغرافیائی محل وقوع صدیوں سے ہمارے لیے وبال جان رہی ہے جس کی وجہ سے بلوچ بطور قوم مشکل اور تکلیف دہ صورت حال سے گزرتی رہی ہے۔



فکری مماثلت

| وقتِ اشاعت :  


وطینت کا محدود تخیل نوع انسانی سے عام اور ہمہ گیر محبت کا کفیل نہیں ہوسکتا ‘ میں بین الاقوامیت کا حامی ہوں اور کائنات کے لئے اسے ضروری سمجھتا ہوں ۔ میر یوسف عزیز مگسی ‘ بلوچستان جدید یکم مارچ 1934۔



شہدائے 8اگست کی پہلی برسی،ذکر چند المیوں کا ۔۔۔!!

| وقتِ اشاعت :  


وقت کاچلن سدا سے یہی رہا ہے کہ یہ کسی کے لئے نہیں رکتا اور اپنے ساتھ بری یابھلی یادیں لے کر چلنا ہی اس کاکام ہے وقت کا افسوس سبھی کو ہوتا ہے مگر یہ یاد کسی کو نہیں رہتا اچھی اوربری یادیں برقرار رہتی ہیں اور انسان انہیں یاد کرکے خوشی اور فخر محسوس کرتا ہے یا پھر غمزدہ ہو کر ناخوشگواریت کا احساس کرتا ہے۔



میرا قاتل کون ہے؟

| وقتِ اشاعت :  


اگست کا مہینہ شروع ہوتے ہی 8 اگست 2016ء کی صبح سول ہسپتال کوئٹہ میں وکلاء پر ہونے والے خودکش حملے سے پیدا ہونے والی دلخراش اور انسانیت سوز مناظر ذہن میں تسلسل سے گردش کرنے لگے تھے۔ یہی تصویر ذہن میں لئے حسب معمول رات سونے کی غرض سے بستر پر لیٹ گیا۔



سانحہ8اگست، پشتون بلوچ تاریخ کا خونیں باب

| وقتِ اشاعت :  


کسی بھی قوم کی تاریخ میں اچھے اور یادگار ایام کی طرح ایسے ایام بھی لازماً ہوتے ہیں جن سے ان کی تلخ یادیں وابستہ ہوتی ہیں قومیں جب اپنے قومی ایام مناتی ہیں یا اپنے اچھے وقتوں کو یا د کرتی ہیں تو برے وقتوں اور ان ایام کی یاد بھی لازماً انہیں آتی ہیں جن سے ان کی بری اور تلخ یادیں وابستہ ہوتی ہیں دنیا کی ہر قوم کی طرح پشتونوں اور بلوچوں میں بھی ایسے ایام ہیں۔