قومی یکجہتی جرگہ بلوچستان کا امن افغان مہاجرین کے انخلاء سے مشروط

| وقتِ اشاعت :  


ملک بھر میں 19 سالوں بعد عدالتی حکمنا مہ پر وفاقی حکومت مردم شماری کرانے جارہی ہے جس کا باقاعدہ آغاز آئندہ ماہ کے دوسرے ہفتے سے بلوچستان سے کیا جارہا ہے،صوبے میں آخری مرتبہ 1998 میں اس وقت کے وزیر اعلیٰ سردار اختر جان مینگل کے دور حکومت میں مردم شماری کرائی گئی تھی



مردم شماری اور بلوچ قومی بقاء

| وقتِ اشاعت :  


بلوچ بحیثیت قوم صدیوں سے تاریخی و تہذیبی،سماجی و ثقافتی،معاشی و جیوگرافی،سیاسی و قباہلی لحاظ سے بلوچستان میں آباد ہیں.بلوچوں نے آبا و جداد سے اپنے قومی تشخص و بقاء ، پہچان و شناخت اور ثقافت و زبانوں کے تحفظ کے لئے کہی سامراجی طالع آزما قوتوں سے نبرد آزما ہو کرمنظم انداز میں اپنا دفاع کرتے رہے.



’’گوادرپانی بحران کا مستقل حل تلاش کیا جائے‘‘

| وقتِ اشاعت :  


حالیہ بارشوں کے بعد گوادر شہر اور نواحی علاقوں میں پانی کا بحران وقتی طور پر ٹل گیا ہے بارشوں کے نتیجے میں آ نکاڑہ ڈیم میں پانچ فٹ پانی کا ذخیر ہ جمع ہوچکا ہے اور محکمہ پبلک ہیلتھ ( پی ایچ ای ) کا کہنا ہے کہ پانی کا ذخیر ہ بمشکل تین یا چار ماہ کے لےئے استعمال ہوسکے گا۔ واضح رہے کہ پورٹ سٹی گوادر کے علاوہ جیونی، پشکان، نگور اور سر بندن کی پانی کی ضر وریات آ نکاڑہ ڈیم سے پوری کی جاتی ہیں لیکن طو یل خشک سالی کے باعث آ نکاڑہ ڈیم گزشتہ سال کے آخر میں خشک ہوگیا تھا



بلوچ سیاست کے تضادات اور مردم شماری

| وقتِ اشاعت :  


بی ایس او کی تقسیم سے قبل اور نیپ کی سیاست کے بعد بلوچستان میں بادی النظر میں شعوری اور نظر یاتی سیاست کا فقدان نظر آتاہے ۔ پا رلیمانی سیاست کی راہدا ریوں میں سفر کر نے کی وجہ سے بلوچستان کی سیاست کی منزل گو یا آ ب و سراب کی نظر ہوگئی ہے ۔ اب یہ سوال کیا جا رہا ہے کہ شا ید بلوچستان میں نظر یاتی سیاست دفن ہوگئی ہے ۔



کم عمری کی شادیاں اور پسماندہ تعلیمی معیار

| وقتِ اشاعت :  


ضلع جعفرآباد کے قریب کے رہائشی غلام جان سے ملاقات اسکولوں کے وزٹ کے دوران ہوئی جب سب علاقے کے لوگوں کو لڑکیوں کی تعلیم کی اہمیت سے آگاہ کر رہے تھے۔۔ دوران گفتگو جب اسکول چھوڑ دینے والی بچیوں کو دوبارہ اسکول داخلے کے لیے آمادہ کر رہے تھے تو غلام جان نے کہا کہ میری بیٹی نے پانچ پاس کیا ہے آگے کوئی مڈل یا ہائی اسکول نہیں تھا



ساحل بلوچستان پر ایک نظر

| وقتِ اشاعت :  


ملک کی کل ساحل کا رقبہ ایک ہزار کلومیٹر ہے جس میں بلوچستان کی ساحلی پٹی بمطابق محکمہ فشریز778کلومیٹر پربلوچستان کے دو اضلاع گوادر اور لسبیلہ پر مشتمل ہے۔گوادر کے ساحل600کلومیٹر جبکہ لسبیلہ کے ساحلی علاقہ 178کلومیٹر پر مشتمل ہے۔



بلوچستان میں متنازع مردم شماری

| وقتِ اشاعت :  


( فیڈریشن آف چیمبرز کامرس اینڈ انڈسٹری کی رپورٹ اور حق ملکیت کی اہمیت۔)
بلوچستان میں مارچ میں ہو نے والی مردم شماری افغان مہاجرین کی وجہ سے تناز عات کاشکار دکھائی دیتی ہے۔اس و قت بلوچستان اور خاص کر کو ئٹہ میں تقریباً40 لاکھ افغان مہا جر آباد ہیں



حصول انصاف مگر مشکل بہت

| وقتِ اشاعت :  


میں نے پاکستان کے سب سے بڑے چورکو پاکستان کی سب سے بڑی عدالت میں لاکھڑاکیا ہے اور اب عدالت کا کام ہے کہ وہ اس
پانامہ کیس میں جو فیصلہ سنا دے۔یہ باتیں جناب عمران خان صاحب نے یوم تشکر کے دن کہی تھیں اور ویسے بھی آجکل انصاف غریب
اور کمزور پاکستانی کیلئیے گوھر نایاب کی صورت اختیار کر گیا ہے



ہم اور بدعنوانی

| وقتِ اشاعت :  


نہ ہی میں کوئی بڑا کالم نگار ہوں اور نہ ہی مجھے الفاظ کا اتار چڑھاؤ آتا ہے مگر آج ایک لفظ نے مجھے قلم اٹھانے پر مجبور کیا ہے۔وہ ایک لفظ لکھنے پڑھنے اور بولنے میں بلاشبہ بہت چھوٹا ہے مگر اس لفظ نے بہت بڑی بڑی معیشتوں اور بڑی بڑی حکومتوں کو زوال پذیر کیا ہے



افغان مہاجرین کی موجودگی میں مردم شماری ۔۔۔ کس کے مفادات کی تکمیل ہوگی ؟

| وقتِ اشاعت :  


وفاقی کابینہ نے صوبوں کی مشاورت کے بغیر محض دو افراد کی سفارش پر افغان مہاجرین کے پاکستان میں قیام کی مدت کو 31مارچ2017تک توسیع دے کر یہ ثابت کردیا کہ اسکی نظر میں چھوٹے صوبوں خصوصاً بلوچستان اور خیبر پختونخوا کی کوئی اہمیت نہیں ۔