ایک اذیت ناک سفر

| وقتِ اشاعت :  


ہم سب انسان اس دنیا میں مسافر کی طرح ہیں اور مسلسل سفر میں ہیں اور سفر کا نام ہی اذیت ہے۔ دنیا جیسے جیسے ترقی کرتا گیا انسان نے اپنے سفر کو بھی آسان بنانے کیلئے تجربات کرتا گیا اور اپنے سفر کو آسان سے آسان تر بنانے کیلئے کامیابیاں سمیٹ تا رہا۔



گوادر اقتصادی راہداری

| وقتِ اشاعت :  


غالباً 37 سال بعد پاکستان و چین دوستی کی سب سے بڑی علامت ایک سڑک کا منصوبہ ہے جو کہ 65 اَرب ڈالر کی لاگت سے بننے والی گوادر اقتصادی راہداری یعنی سی پیک ہے اس ضمن میں کاشغر سے گوادر تک دو ہزار کلو میٹر لمبی سڑک کے منصوبے پر وزیر اعظم پاکستان نواز شریف نے آٹھ یاداشتوں اور مختلف معاہدوں پر دستخط کئے



نوح اپنی کشتی بنا رہا ہے ایک کنکر اور ساکن لہریں

| وقتِ اشاعت :  


جب ایک اتوارپہلے باضابطہ طورپردو دیرینہ دوستوں کو پارٹی سے نکال دیا گیا تواگلے اتوار (11دسمبر)کو ایران نے سیستان و بلوچستان میں پاکستانی مکران کے سرحد کے قریب جنگی مشقیں شروع کردیں توقع کے بر خلاف جوشخص سوشل میڈیا اور پبلک میں پروپیگنڈے کے محاذ پر سب سے زیادہ سرگرم تھا ‘ کے بارے میں خاموشی اختیار کی گئی



جنرل صاحب آپ پنجگور کے بھی ایم این اے ہیں

| وقتِ اشاعت :  


گزشتہ ایک ہفتے سے قطر شیخ کی جانب سے وفاقی وزیر (ر) جنرل عبدالقادر بلوچ کی کاوشوں سے خاران اور واشک کو پانچ پانچ ایمبولینس کی فراہمی کے حوالے سے سوشل میڈیا پر ایک مہم جاری ہے اور عوامی حلقوں کی جانب سے جنرل صاحب کی عوام دوستانہ



سریاب مسائل کا گڑھ عوامی نمائندے غائب

| وقتِ اشاعت :  


سریاب ضلع کوئٹہ کا واحد علاقہ ہے جس کی مجموعی پسماندگی، جہالت اور ناخواندگی کے متعلق اکثر اوقات اہل قلم نے چندسطریں ضرور رقم کی ہوگی کئی نے علاقے کی اس پسماندگی کو موجودہ نمائندے کے گلے کا طوق قرار دیا



کیا افغانستان میں امن کا قیام ممکن ہے؟

| وقتِ اشاعت :  


بد قسمت ہیں وہ ممالک جو کسی نہ کسی وجہ سے جنگ کے شعلوں کی لپیٹ میں آجاتے ہیں۔ یہ جنگ اپنی غلطی کی وجہ سے بھی ہو سکتی ہے یا کسی بد نیت طاقت کی طرف سے مسلط بھی کی جاسکتی ہے۔وجہ کوئی بھی ہو جنگ کا نتیجہ ہمیشہ مالی،جانی، معاشی اور انسانی تباہی کی



عرب شیوخ کیلئے بے چین عوامی نمائندے اپنے ہی لوگوں کے حقوق سے غافل

| وقتِ اشاعت :  


میرا موضوع بیچارہ مہمان پرندہ تلور ہے اور نہ اماراتی یاقطری شہزادے بلکہ میرا موضوع خاران اور واشک کے غریب اور پرامن عوام ہیں جن کو مفاد پرست اپنی ذاتی مفادت کی جنگ میں قبائلی تعصب اور نفرت کی طرف دھکیلنا چاہتے ہیں



پلی بارگین

| وقتِ اشاعت :  


ایڈمرل منصور الحق پاکستان نیوی کے سربراہ تھے، وہ 10 نومبر 1994ء سے یکم مئی 1997ء تک نیول چیف رہے، منصور الحق پر ایک محتاط اندازے کے مطابق تقریباً 300 ارب روپے کی کرپشن کا الزام لگا، میاں نواز شریف نے یکم مئی 1997ء کو انھیں نوکری سے



تعلیمی ہنگامی صورتحال

| وقتِ اشاعت :  


ایک مرتبہ شیطان محفل جمائے بیٹھا تھا اور اپنے شاگردوں سے دن بھرکا احوال معلوم کررہاتھا ۔تمام چیلے اپنے کارہائے نمایاں بیا ن کرتے رہے مگر شیطان صاحب ان کی طرف متوجہ نہ ہوا۔



ریمنڈ اور سلیم میں تفاوت

| وقتِ اشاعت :  


مو ضوع پر جانے سے قبل ایک مختصر روداد بیان کرنے میں کیا قباحت ہے ۔خاکسار کی گزشتہ حقیرانہ تحریر میں اپنی کوتابینی اور کم علمی کے اظہار پر احباب کی پرُ خلوص اپنائیت نے طالب علم کی ناتواں انگلیوں میں نہ صرف جان ڈال دی