تعلیم کو بوجھ بننے سے روکیں!

| وقتِ اشاعت :  


کسی نظرئیے کی افزائش سالوں پر محیط ہوتی ہے یعنی ایک سوچ کو نظریہ بننے میں ایک طویل سفر درپیش ہوتا ہے ، یہ سفر کٹھن اور مشقت سے بھر پور ہوتا ہے اس سفر میں صبرکا دامن نہیں چھوٹتا یعنی یہ عمل بالکل کسی سونے کو کندن بننے کیلئے آگ کی بھٹی سے گزرنے سے مماثلت رکھتا ہے۔



گوادرکاسیاسی نقشہ

| وقتِ اشاعت :  


گوادر سی پیک کا مرکز ہے پورٹ سٹی اور جغرافیائی لحاظ سے سینٹرل ایشیا کا تجارتی گیٹ وے بھی ہے۔نہ صرف بلوچستان کی سیاسی حلقوں کے لئے بلکہ ملکی سیاسی حلقوں کے لئے گوادر کی صوبائی نشست حلقہ پی بی 51نہایت اہم تصور کی جاتی ہے ۔



’’لیاری کی ادھوری کہانی‘‘ پر ایک نظر

| وقتِ اشاعت :  


لیاری آج کچھ بھی سہی مگر کبھی کچھ اور ہوا کرتا تھا، ہر سمت بکھری رعنائیاں ہر نفس کو جینے کا جواز فراہم کرتی تھیں۔ آج جو کچھ ہم تصور نہیں کرسکتے کبھی وہاں حقیقت ہوا کرتی تھی۔



سی پیک اورگوادر

| وقتِ اشاعت :  


گزشتہ کچھ عرصے سے چائنا پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک ) کے حوالے سے اس قدر اعلانات، دعوے، بیانات، تجزیے اور اقدامات سامنے آ چکے ہیں کہ سی پیک کے حوالے سے چائنا نہ سہی پاکستان کی ہر صوبے کے لوگوں کے دل و دماغ امیدوں ، توقعات اور خدشات سے لبریز ہیں اور اگر یہ بات گوادر میں بیٹھ کر کی جائے تو یہاں امید اور خدشات کئی گنّا زیادہ ہونگے۔



کر یمین۔۔ کا نگو ہیمو ریجیک فیو ر (کانگو کی بیماری ) ایک جان لیوابیماری ہے 

| وقتِ اشاعت :  


کر یمین۔۔ کا نگو ہیمو ریجیک فیو رایک جان لیوا وا ئیر ل بیماری ہے۔ اس بیماری کی وجہ ایک وا ئر س Nairovirusہے۔ جو کہ مال مو یشیوں(بیل ، گا ئے ، دنبے ،بکر ے وغیر ہ)اور جنگلی جا نو روں (ہر ن ، چوہے بارہ سنگاہ ،خرگوش، کو نج وغیر ہ)کے خون میں پا یا جاتا ہے۔



تاریخ ساز شخصیت نواب بگٹی اقتدار کے ایوانوں سے کوہلو کے غاروں تک

| وقتِ اشاعت :  


26 اگست 2006ء بلوچستان کی تاریخ کا وہ سیاہ ترین باب ہے جب بلوچ بزرگ سیاستدان شہباز اکبر خان بگٹی ضلع کوہلو اور ڈیرہ بگٹی کے پہاڑی علاقہ میں فورسز سے لڑتے ہوئے جام شہادت نوش کر گئے ان کی شہادت کی خبر نجی ٹیلیویژن پر نشر ہونا شروع ہوئی تو نہ صرف بلوچستان بلکہ ملک بھر سمیت بیرون ملک میں غم و غصے کی فضا قائم ہو گئی ان کی شہادت کی خبر جنگل میں آگ کی طرح پھیل گئی۔



نواب بگٹی کی شہادت

| وقتِ اشاعت :  


پوری قوم آج نواب اکبر بگٹی شہید کی برسی منارہی ہے 26اگست 2006کو نواب بگٹی کو ایک فوجی کارروائی میں شہید کیا گیا تھا واقعہ کی تمام تفصیل حکومت کے پاس ہے تاہم جو بہت کم اطلاعات عام لوگوں تک پہنچی تھیں ان کے مطابق نواب بگٹی نے ہتھیار ڈالنے سے شہادت کو ترجیح دی اور مزاحمت کا فیصلہ کرلیا ۔



شہیداعظم نواب اکبربگٹی

| وقتِ اشاعت :  


زندگی اللہ تعالیٰ کی ایک بہت بڑی نعمت ہے انسان جب جنم لیتا ہے اس دنیا میں داخل ہوتا ہے وہ آزاد اور خودمختار ہوتا ہے لیکن اگر اس کی قوم غلام ہے تو وہ بھی غلام ہی کہلائے گا اگر آزاد ہے تو آزادی کی فضاء میں جنم لیتا ہے وہ شخص جس نے آزادی کی فضاء میں جنم لیا ہے وہ تو خوش قسمت ہے لیکن دوسری جانب بد قسمت وہ لوگ ہیں جو غلامی میں جنم لیتے ہیں اور دوسروں کے دست نگر رہ کر محکومی ‘ محرومی اور غلامی کی زندگی گزارتے ہیں ۔